تاج محل کے مینار منہدم ہو گئے

تاج محل کےمینار منہدم ہو گئے

دنیا کے ‘سات عجوبوں میں شامل ایک عجوبہ تاج محل ہندستان کے شہر آگرہ میں واقع مشہور تاریخی عمارت ہے ۔ تاج محل کے دو مختلف داخلی دروازوں پر موجود دو مینار طوفان کے نتیجے میں گر گئے ،گزشتہ بدھ یعنی ۱۱؍ اپریل کو ۱۳۰؍کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی طوفانی ہواؤں کے نتیجے میں۱۲؍ فٹ سے اونچے مینار مہندم ہو گئے،جبکہ مرکزی عمارت کے گرد چاربلند مینار اس طوفان کے نتیجے میں محفوظ ہیں۔
تاج محل کوسترہویں صدی میں شاہجہاں نے ممتاز کی یاد میں تعمیر کیا تھا ، یہ ان کی محبت کی علامت ہے ،محبت کی اس نشانی کو دیکھنے روزانہ ہزاروں سیاح آتے ہیں اور دنیا میں سیاحت کے حوالے سے مقبول ترین مقامات میں سے ایک ہے۔
گرنے والا ایک مینار شاہی دروازے پر موجود تھا اور اس دروازے سے سیاح اکثر اوقات تاج محل کی پہلی جھلک دیکھتے ہیں۔جبکہ دوسرا مینار جنوبی دروازے پر موجود تھا۔
تاج محل سفید سنگِ مر مر سے بنا ہے اور اسے یونیسکو نے سنہ ۱۹۸۳؍میں  عالمی تاریخی ورثہ قرار دیا تھا ،تاہم حالیہ برسوں میں فضائی آلودگی کے سبب چمکتا ہوا سنگ مرمر ماند پڑ رہا ہے۔
حکومت نے اس کے تحفظ کے لیے اس کے آس پاس کثافت پھیلانے والی فیکٹریوں کو ممنوع قرار دیا ہے اور عمارت کی مرمت کے لیے ماہرین کی ایک ٹیم بھی مقرر کی ہے۔دیکھنا یہ ہے کہ محبت کی اس نشانی کے تحفظ کے لیے حکومت کیا اقدام کرتی ہے ۔

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com