صحت مند رہنے کے لیے چھٹی منانا ضروری ہے

صحت مند رہنے کے لیے چھٹی منانا ضروری ہے

چھٹیوں کو خوشگوار بنانا بھی نہایت اہم ہوتا ہے ۔زندگی کے ہر شعبے ، فیکٹری ، دفاتر ، تعلیمی ادارے ،صحافتی ادارے ہوں یا کسی بھی قسم کا کام ہو ، ہر جگہ ہفتے میں ایک چھٹی مقرر ہوتی ہے ۔ عام طور سے یہ دن اتوار کا ہوتا ہے ، مگر جو ادارے چوبیس گھنٹے چلتے ہیں ، وہاں ملازمین کی چھٹیاں مختلف دنوں میں ہوتی ہیں ۔ سب کو ایک ساتھ چھٹی نہیں دی جاتی ۔ ہفتے میں ایک دن کی چھٹی سے ماحول بدل جانے سےا ور کام کے بوجھ کا احساس نہیں ہونے ہر انسان تازہ دم ہو کر اگلے دن کام ایک سے چھ دنوں کے لیے کام کرنے کے لیے ذہنی طور پر تیار ہو جاتا ہے ۔ اس کے علاوہ ہوتی ہیں طویل تعطیلات ۔ یعنی کسی بھی ملک کے ماحول اور موسم کے مطابق گرمی یا سردی کی چھٹیاں ۔ ایک یا دو ماہ کی ہوتی ہیں ، انہیں خوشگوار بنانا بے حد ضروری ہے ورنہ چھٹیوں کا لطف ہی ختم ہو جاتا ہے ۔ اکثر لوگ ایسے مواقع پر کسی دوسرے علاقے میں چلے جاتے ہیں ، یا اپنے آبائی وطن کا رخ کرتے ہیں ۔در اصل چھٹیاں ذہنی اور جسمانی سکون حاصل کرنے کے لیے ہوتی ہیں ، جو ہر انسان کی کارکردگی اور تخلیقی صلاحیت میں اضافہ کا باعث بنتی ہیں ، لیکن چھٹیوں کے صحیح استعمال کے طریقے سے واقفیت ہونا چاہیے۔۲۰۱۳ میں ’’ ان دی جنرل آف ہیپی نیس اسٹڈیز‘‘ میں شائع شدہ رپورٹ کے مطابق جسیکا ڈی بلوم (یونیورسٹی آف ٹیمپیئر فن لینڈ میں پوسٹ ڈاکٹر ریسرچ فیلو )نے کہا ہے کہچھٹیاں گزارنے والے آٹھ دن تک بہتر محسوس کرتے ہیں اور پھر اس کے بعد وہ اکتاہٹ محسوس کرنے لگتے ہیں ، جس سے چھٹیوں کا لطف بھی ختم ہونے لگتا ہے۔ آٹھ دنوں کی مسلسل چھٹی کافی مفید ثابت ہوتی ہے ۔جسیکا ڈی بلون کا مزید یہ کہنا ہے کہ جس قدر نیند پوری کرنے سے انسانی جسم و ذہن قوت کی تلافی ہوتی ہے، اس سے کہیں زیادہ چھٹیاں گزارنے سے تلافی ہوسکتی ہے، اس لیے کہنا چاہیے کہ چھٹیاں نیند سے بہتر ہیں ۔طویل عمر تک صحت مند رہنے کے لیے اپنی مصروفیت سے ہمیشہ چھٹیاں گزارنے کے لیے وقت نکالنا چاہیے ۔ ڈی بلوم نے چھٹیاں گزارنے والے ۵۴ ؍ افراد پر تحقیق کی ، جن میں سے ہر ایک نے سال میں ۲۳؍ دن چھٹیوں کے گزارے تھے ۔تحقیق کے مطابق چھوٹی اور مسلسل چھٹیاں زیادہ مفید ہوتی ہیں ، بہ نسبت طویل اور غیر متعین چھٹیوں کے ۔اپنے ذہن کو نت نئی سرگرمیوں کے لیے تازہ دم رکھنا چاہیے۔ایسے کام کرنا چاہیے ، جو پہلے کبھی نہیں کیے ہوں ۔ اپنے روز مرہ میں کچھ مختلف انداز اختیار کر نے چاہیے، سب سے اچھی بات یہ ہے کہ کچھ دنوں کی چھٹیوں کو اپنے ہی علاقے میں اس طرح کی مصروفیت کے ساتھ گزار ا جا سکتا ہے ۔ محققین کے مطابق اپنی چھٹیوں کا استعمال اچھے انداز سے اور خوش و خرم رہتے ہوئے کرنا چاہیے۔چھٹیوں کی منصوبہ بندی بھی اتنی ہی خوشگوار اور دل کو چھو لنے والے انداز سے کرنا چاہیے، جیسے واقعی بہت لطف کے ساتھ چھٹی منا ئی جائے گی ہفتے بھرتھوڑی تھوڑی جھپکی لینے یا نیم خوابیدہ کیفیت میں وقت گزارنے سے بہتر ہوتا ہے کہ چھٹی کے موقع پر تسلسل سے نیند مکمل کی جائے ۔ سال میں ایک بار پندرہ دن یا ایک ماہ کی چھٹی لینے سے بہتر یہ ہو سکتا ہے کہ ہے کہ چھوٹے چھوٹے وقفے پر چھوٹی چھوٹی چھٹیاں لی جائیں ، اس سے تازہ دم ہو کر دوبارہ کام کرنے میں دقت یا الکسی کا احساس بھی نہیں ہوتا ۔

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com