فلم ’’باہو بلی‘‘ دیکھتے ہوئے برین سرجری؟

ایک خبر کے مطابق ایک ۴۳؍ سالہ خاتون ، ہیں ونئے کماری ،جو کہ نرس ہیں ، انہیں  فِٹ آیا کرتی تھی اور چکر کے دورے پڑتے تھے ، علاج کی غرض سے انہیں گنٹور کے ایک ملٹی اسپیشلٹی ہسپتال میں داخل کر دیا گیا ۔جہاں طبی معائنے کے بعد تشخیص ہوئی کہ انہیں برین ٹیومر ہے ۔ ان کی حالت کافی سنگین تھی اور ڈاکٹروں کو فوری فیصلہ کرنا تھا ۔ تاہم مشکل یہ تھی کہ مریضہ کو آپریشن کے دوران ہوش میں رکھنا ضروری تھا ، انہیں بے ہوش نہیں کیا جا سکتا تھا ۔ڈاکٹروں نے اس کے لیے ترکیب نکالی کہ تلگو فلم ’’باہو بلی‘‘ مریضہ کو دکھاتے ہوئے اسے ہوش میں رکھ کر آپریشن کیا جائے ۔ ڈاکٹروں نے آپریشن تھیٹر میں لیپ ٹاپ پر یہ فلم لگا کر مریضہ کو مصروف کر دیا اور کامیاب آپریشن کر دیا ۔یہ آپریشن دیڑھ گھنٹے کا تھا اور کامیاب رہا ۔ ڈاکٹروں کی ٹیم نے اس آپریشن کو’’ باہو بلی برین سرجری ‘‘ کا نام دیا ۔ یہ خبر دلچسپی سے خالی نہیں ہے ۔ ہندستانی عوام فلموں کے شائق ضرور ہیں ، مگر یہ اپنے آپ میں ایک انوکھا واقعہ ہے اور ڈاکٹروں کی صلاحیت اور سوچ بھی قابل تحسین ہے ۔ دراصل ’’ باہو بلی ‘‘ جیسے فلموں میں کئی ایسے مناظر ہیں ، جو ناممکن کو ممکن بناتے ہوئے دکھائے گئے ہیں۔ یہ اینی میشن اور آفٹر افیکٹس کا بہترین کمال ہے ، جو دیکھنے والوں کو مسحور کر دیتا ہے ۔ عام انسان جب بڑے پردے پر کوئی فلم دیکھتا ہے ، تو گویا وہ تین گھنٹے کے لیے تمام فکر و تردد سے آزاد ہو جاتا ہے ، فلم بھی گویا نشے کی گولی ہے ، یا پھر دیکھنے والا خود کو ہیرو کی جگہ تصور کر کے اپنی زندگی کے منفی پہلوؤں کی بھڑاس نکالتا ہے ۔ ڈاکٹروں نے انسانی نفسیات کے اس پہلو کو بضوبی سمجھ لیا اور اس کا مثبت استعمال ونئے کماری کے آپریشن کے لیے کیا ہے ۔ ایسے بہت سے پیچیدہ آپریشن ہوتے ہیں ، جس میں ڈاکٹروں کے سامنے یہ چیلنج ہوتا ہے کہ وہ مریض کو بے ہوش نہیں کر سکتے ۔ آئندہ بھی کسی ایسے موقع پر ڈاکٹر ضروری ایسی ہی کسی فلم کا انتخاب کر کے مریض کو ذہنی طور پر مصروف کر کے ہوش کی حالت میں آپریشن کریں گے ۔ ونئے کماری کو چاہیے کہ ڈاکٹروں کے ساتھ فلم ’’ باہو بلی ‘‘ بنانے والوں کا بھی شکریہ ادا کریں ۔

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com