سرکاری اسکولوں میں سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب ، بہتر اقدام

ملک کی ترقی کے لیے طبی اور تعلیمی سہولت کی ضرورت ہے ، کھوکھلے نعروں کی نہیں ، سرکاری اسکولوں میں سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب ، بہتر اقدام

ان دنوں یہ خبر گرم ہے کہ دلی کے سرکاری اسکولوں میں سی سی ٹی وی کمرے نصب کیے جا رہے ہیں ، جس سے والدین موبائل فون ایپ کے ذریعے سی سی ٹی وی کیمرے کی لائیو ویڈیو دیکھ سکتے ہیں ۔ اس سے یہ ہوگا کہ بچے ہر وقت والدین کی نگرانی میں رہیں گے ۔ اسی کے ساتھ اساتذہ اور دیگر اسٹاف کی بھی نگرانی ہوگی ۔
اس تعلق سے دلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجروال کا کہنا ہے کہ تمام سرکاری اسکولوں میں کیمروں کی تنصیب تین مہینے میں مکمل ہو جائے گی۔انھوں نےمزیدکہا کہ حکومت کے ان اقدامات کے ذریعے سرکاری نظام تعلیم کو شفاف اور جوابدہ بنایا جا رہا ہے۔
دلی کے وزیر اعلا اروند کیجری وال کے اس اقدام سے بہت سے حادثات پر بھی قابو پایا جا سکتا ہے، مثلاً گزشتہ سال ستمبر میں دلی کے قریب ایک نجی سکول کے باتھ روم میں بچے کا گلا کاٹا گیا تھا،اس واقعے کے چند روز بعد ایک اور سکول میں ایک پانچ سالہ بچی کے ساتھ دست درازی کا واقعہ بھی ہوا تھا اور اس قسم کے کئی حادثات ہوتے رہتے ہیں ، جو اس اقدام سے قابو میں آ سکتے ہیں ۔ضروری یہ بھی ہے کہ اسکول بسوں میں بھی کیمرے نصب کیے جائیں ، تاکہ گھر سے نکل کر گھر واپس آنے تکطلبا کیمرے کی نگرانی میں رہیں ، کوئی مجرم بچوں کو نقصان نہیں پہنچا سکے اور خدا نخواستہ ایسا کچھ ہو جاتا ہے ، تو مجرم فوراً پولس کی گرفت میں آ سکتا ہے۔
کہتے ہیں ، جس میں اعلا تعلیم اور بہترین طبی خدمات حکومت کی جانب سے ہوتی ہیں ، وہ ملک تیزی سے ترقی کرتا ہے ۔ سرکاری اسکولوں میں کیمرے کی تنصیب سے تعلیمی نظام بھی بہترہو سکتا ہے اور طلبا بھی قابو میں رہ سکتے ہیں ۔ ایسے ہی اگر سرکاری اسپتالوں پر بھی قابو پانے کی کوشش کی جائے اور عوام کو بہتر خدمات اور دوائیں ملنے لگ جائیں ، تو اور بھی مسائل حل ہو سکتے ہیں ۔ مگر ہمارا ملک اور حکمراں کئی ایسے مسائل میں خود بھی الجھے ہوئے ہیں اور عوام کو بھی الجھا ئے رکھا ہے ، مثلاً ، جانوروں کا تحفظ، بابری مسجد اور رام مندر کا مسئلہ، لو جہاد ، طلاق ثلاثہ ، حج سبسڈی وغیرہ وغیرہ ۔۔۔ ایسے معاملات کے پیچھے اپنا وقت اور توانائی خرچ کرنے کے بعد مثبت اوربہتر کاموں کے لیے کیا بچتا ہے ؟ محض کھوکھلے نعرے ؟

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com