ڈیجیٹل انڈیا ؟

ان دنوں ملک کی معیشت زیر بحث ہے ۔ذرائع ابلاغ ہوں یا سوشل میڈیا، سب سُر سے سُر ملا رہے ہیں ۔ مہنگائی نے سب کا ناطقہ بند کر رکھا ہے ۔ گزشتہ برس اچانک نوٹ بندی سے ملک میں ہڑبونگ مچ گئی تھی، ابھی عوام اس مشکل سے نکل بھی نہیں پائے تھے کہ جی ایس ٹی کی مار پڑ گئی ۔ مہنگائی ہے کہ روز بروز بڑھتی جا رہی ہے ۔رسوئی گیس کی سبسڈی دھیرے دھیرے بند کر دی گئی اور سلینڈر کی قیمت میں اضافہ ہوتا گیا ۔ پٹرول اور ڈیزل کے دام بڑھ گئے ۔ ملک کی معیشت ان دنوں سست روی کا شکار ہے ، ملک کی معاشی حالت ابتر ہوتی جا رہی ہے ۔ اس صورت حال پر چاروں طرف سے تبصرے ہو رہے ہیں اور سوشل میڈیا پر بھی لوگ اظہار خیال کر رہے ہیں ۔ زیادہ تر نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کو اس کے لیے ذمہ دار قرار دیا جا رہا ہے ۔
بی جے پی کے سینئر لیڈر اور سابق وزیرفائنانس یشونت سنہا کا خیال بھی یہی ہے کہ ملک کی معاشی ابتری کی بڑی وجوہات نوٹ بندی اور جی ایس ٹی ہیں ۔ یشونت سنہا نے جو کچھ کہا وہ اہم ہے ، کیونکہ وہ وزیر فائنانس رہ چکے ہیں۔ انہوں نے ملک کی معیشت اور اس پر اثر انداز ہونے والے عوامل کو قریب سے دیکھا ہے ۔ ان حالات میں اگر وہ ان دو معاملات کو معاشی ابتری کے لیے ذمہ دار قرار دیتے ہیں تو ان کی اس تنقید کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ۔یشونت سنہا کی تنقید کو قبول کرنے سے انکار کرتے ہوئے یہ دعواکیا جارہا ہے کہ ساری دنیا ہندستان کی معاشی حالت کا اعتراف کر رہی ہے۔اس طرح کے بیان سے عوام کو گمراہ کرنے کی ایک ناکام کوشش کی جا رہی ہے ۔عوام تو اب بھی مہنگائی کی وجہ سے پریشان ہیں ہی،ساتھ ہی ہر وقت یہ بھی کھٹکا لگا رہتا ہے کہ اب کون سا نیا شوشہ حکومت چھوڑنے والی ہے ؟
کسانوں کے قرض معافی کا صرف اعلان کیا جاتا ہے ، مگر یہ صرف اعلان ہی ہوتا ہے ، اس پر عمل کتنا ہو رہا ہے؟صنعتی پیداوار بری طرح متاثر ہوجانے کی وجہ سے بے روزگاری میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کی وجہ سے عوام پریشانی میں مبتلا ہیں ، کوئی بھی اس سے خوش نہیں ہے اور پھر بھی حکومت ترقی اور خوش حالی کے دعوے کر رہی ہے؟ حکومت نے نوٹ بندی کی وجوہات میں ایک وجہ بتائی تھی کہ ڈیجیٹل معیشت ہوگی ، مگر یہ صرف دعوا ہی رہ گیا ۔ دیجیٹل معیشت اور ڈیجیٹل انڈیا کا خواب ابھی شرمندۂ تعبیر نہیں ہو سکا ۔

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com