۹؍جنوری سے راشن کارڈ کی آن لائن فراہمی کا انتظام

بنگلورو: راشن کارڈ کے لیے آن لائن درخواست دینے کے ساتھ ہی فوری طور پر راشن کارڈ جاری کرنے کا نظام۹؍ جنوری سے رائج کردیا جائے گا۔ وزیر شہری رسد وخوراک یوٹی قادر نے اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے یہ بتایا اور انہوں نے مزید کہاکہ ملک میں پہلی بار اس طرح کا نظام متعارف کروایا جا رہاہے۔انہوں نے کہاکہ آن لائن اے پی ایل کارڈ کی درخواست جمع ہوتے ہی عرضی اے پی ایل کارڈ فوری طور پر پرنٹ آؤٹ کے ذریعہ نکالا جاسکتا ہے، اس کے بعد ایک ہفتے کے اندر درخواست گزاروں کو راشن کارڈ بذریعہ ڈاک روانہ کردیا جائے گا۔ مزید یہ بھی بتایا کہ ۹؍ جنوری کو اس نئے نظام کا افتتاح وزیر اعلیٰ سدرامیا کریںگے۔انہوںنے کہاکہ خط افلاس سے نیچے زندگی بسر کرنے والے خاندانوں کو نئے بی پی ایل کارڈ جاری کرنے کا بھی فیصلہ کیاگیا ہے۔
انہوں نے کہاکہ بی پی ایل راشن کارڈوں کے لیے دس لاکھ سے زائد درخواستیں موصول ہوئی ہیں، لیکن محکمہ نے طے کیاہے کہ ماضی میں جن لوگوں نے درخواست دی ہے انہیں دوبارہ آن لائن درخواست دینی ہوگی، لیکن اس درخواست کے لیے انہیں کسی طرح کی فیس جمع کرنے کی ضرورت نہیں۔انہوں نے کہاکہ بی پی ایل راشن کارڈ کی فراہمی کے لیے دیہی سطح پر گرام پنچایت کے اکاؤنٹنٹ کی طرف سے معائنہ کیا جائے گا اور شہری علاقوں میں محکمۂ شہری رسد کے افسران معائنہ کے بعد بی پی ایل کارڈ جاری کرنے کی سفارش کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ بی بی ایل کارڈ حاصل کرنے کے لیے جتنے لوگوں کے نام شامل ہوں گے ان کا آدھار کارڈ ہونا لازمی قرار دیا گیا ہے، جبکہ اے پی ایل کارڈ کے لیے خاندان کے کسی ایک فرد کاآدھار کارڈ کافی ہے۔اے پی ایل کارڈ کمپیوٹر کے ذریعہ ہی ڈاؤن لوڈ کیاجاسکتاہے۔ اے پی ایل راشن کارڈ کے لیے خاندان کے ایک فرد کا آدھار نمبر درج کرنے کے بعد پتہ وغیرہ کے لیے کسی اور دستاویز کا تقاضہ نہیں کیا جائے گا، بلکہ جو بھی تفصیلات درج کی جائیں گی ان کی بنیاد پر راشن کارڈ جاری کیا جائے گا۔ اے پی ایل کارڈ کے ذریعہ ماہانہ پانچ کلو چاول اور پانچ کلو گیہوں خریداجاسکتا ہے۔

Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com