جدید ٹیکنالوجی کی مہربانیاں

  • یہ بھی سوچنے کہ بات ہے کہ جدید ٹیکنالوجی پر کس قدر انحصار کیا جا سکتا ہے؟ایک وقت تھا لوگوں کے پاس ٹیلی فون ڈائریکٹری ہوا کرتی تھی ، اکثر لوگ مخصوص نمبر زبانی یاد رکھا کرتے تھے ۔اب یہ سب فون میں شامل ہو گئے فون ڈائریکٹری ندارد ہو گئی۔ جدید ٹیکنالوجی میں خاص طور سے انٹرنیٹ اور اسمارٹ فون نے اس قدر ترقی کر لی ہے کہ دنیا سمٹ کر مٹھی میں آ گئی ہے ۔
    اب مرض کی تشخیص بھی کمپیوٹر کے ذریعے ہوتی ہے ۔جدید ٹیکنالوجی اور آلات یعنی کمپیوٹرز اور انٹرنیٹ نے ہماری دنیا پر قبضہ کر لیا ہے اور ان کی پیش رفت جا رہی ہے۔
    ایک وقت تھا جب ہم لوکل یا دور مسافت کی ٹرین سے سفر کیا کرتے ، تو بیشتر مسافر کتاب یا اخبار کا مطالعہ کرتے نظر آتے ، مگر اب جوان ، بوڑھا ، بچہ ہو یا خاتون سب کے ہاتھ میں موبائل اور کان میں ہیڈ فون نظر آتا ہے ۔ پاس بیٹھے ہوئے افراد کو ایک دوسرے کی آواز بھی سنائی نہیں دیتی اور نہ ہی کوئی کسی کی جانب دیکھتا ہے ۔ یہ ترقی ہو رہی ہے ۔
    اب مختلف ہسپتالوں میں مریضوں کی تفصیل اکٹھا کر کے اسے مرکزیت دی گئی ہے ، تاکہ ایک شہر سے دورے شہر یا ہسپتال میں مریض جائے ، تو اسے فائل لے جانے کی زحمت نہ ہو ، وہ اپنا کوڈ نمبر بتائے اور اس کی تفصیل سامنے آ جاتی ہے ۔
    اے ٹی ایم اور پے ٹی ایم جیسے کارڈ جاری کیے گئے تاکہ آنلائن بنکنگ میں آسانی ہو اور بغیر نقد رقم کے آسانی سے خریداری اور ادائگی ہو سکے۔
    کسی بھی قسم کا سفر ہو ٹرین کا یا ہوائی ، ٹکٹ ہاتھ میں نہ ہو بس آپ کے موبائل میں اس کی تفصیل ہو ، آپ سفر کر سکتے ہیں ۔
    دنیا بھر کی معلومات اب انگلی کی ایک جنبش پر گوگل فراہم کر رہا ہے ۔ کتابوں کا ذخیرہ کھنگالنے کی ضرورت نہیں رہی ۔
    سرکاری دفتروں کی ہزاروں فائلیں ایک چھوٹے سے میموری کارڈ میں سما گئی ہیں ۔ کیا آ ج سے تین دہائی قبل ہم یہ سوچ بھی سکتے تھے ؟
    ہم اب پوری طرح سے جدید ٹیکنالوجی کے دام میں آ گئے ہیں ۔ اس کے بغیر اب نہ صبح ہوتی ہے اور نہ شام ۔ مگر جب ہمارا چھوٹا سا موبائل کسی وجہ سے فارمیٹ ہو جاتا ہے اور ڈاٹا سے ہم محروم ہو جاتے ہیں ، تب کس قدر افسوس ہوتا ہے ، جب کمپیوٹر سے ڈاٹا چلا جائے اور اس کی باز یافت ممکن نہ ہو تو ہماری کیا حالت ہوتی ہے ؟
    ابھی حال ہی میں دنیا کے ۹۹؍ ممالک سائبر حملے کی زد پر آ گئے ہیں اور اپنے ڈاٹا سے محروم ہو گئے ہیں ، کیا اب پورے ڈاٹا کی بازیافت ممکن ہے ؟ اس صورت میں کیا جدید ٹیکنالوجی پو
  • پوری طرح انحصار کیا جا سکتا ہے ؟
  • شیریں دلوی
Please follow and like us:
0

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook Auto Publish Powered By : XYZScripts.com